2018 سینیٹ انتخابات ویڈیو سکینڈل: مزید شواہد جمع کرانے کیلئے نون لیگ کو مہلت

اسلام آباد:الیکشن کمیشن نے 2018 سینیٹ انتخابات ویڈیو سکینڈل کیس کے مزید شواہد جمع کرانے کیلئے نون لیگ کو مہلت دے دی۔ چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس دیئے کہ مزید شواہد کا جائزہ لے کر ضرورت کے مطابق کاروائی کریں گے۔
چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5 رکنی کمیشن نے 2018 سینیٹ انتخابات ویڈیو سکینڈل کیس کی سماعت کی۔ درخواستگزار مرتضی جاوید عباسی وکیل کے ہمراہ پیش ہوئے۔ مرتضی جاوید عباسی نے انکوائری اور ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا مطالہ کرتے ہوئے کہا کہ ویڈیو میں موجود لوگ اراکین اسمبلی ہیں، ویڈیو آنے کے بعد اراکین اسمبلی خیبرپختونخوا کو برا بھلا کہا جا رہا، پرویز خٹک اور اسد قیصر معاملے میں ملوث تھے، معاملہ ہارس ٹریڈنگ کے دائرے میں آتا ہے۔
ممبر الیکشن کمیشن ارشاد قیصر نے کہا کہ چئیرمین سینیٹ کے انتخابات میں بھی جن لوگوں نے ووٹ دیئے ان کے بارے میں کیا خیال ہے۔ ممبر الیکشن کمیشن الطاف ابراہیم نے کہا کہ باپ جیت جائے تو الیکشن شفاف اور بیٹا جیت جائے تو الیکشن میں دھاندلی ہوئی، یہاں کوئی بھی شکست ماننے کو تیار نہیں۔ الیکشن کمیشن نے سماعت 9 مارچ تک ملتوی کر دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں