بابرا عظم اور چیف سلیکٹر میں اختلافات، شاہد آفریدی بھی میدان میں آگئے

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی بابر اعظم کی سپورٹ میں کھل کر سامنے آگئے انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی ) اور چیف سلیکٹر کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق شاہد آفریدی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خبریں آرہی ہیں چیف سلیکٹر اور ‏کپتان بابر اعظم کے تعلقات ٹھیک نہیں ہیں، سلیکشن میں سب سے اہم کردار کپتان کا ہوتا ہے کیونکہ اس نے میدان میں ٹیم ‏کھلانا ہوتی ہے، اس پر بہت دباؤ ہوتا ہے، بابر اعظم کو مستقبل میں ساتھ لیکر چلنا ہے تو اسے اختیارات بھی دینا ہوں گے، ‏اس کے ساتھ مل کر کام کرنا ہوگا۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ جو بھی دو میچوں میں پرفارم کرتا ہے اس کو ٹیم میں شامل کرلیا جاتا ہے، نسیم شاہ سمیت کئی ‏کھلاڑیوں کو کھلا کر اب ٹیم میں شامل ہی نہیں کیا گیا۔پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل )ہمارا برینڈ ہے، اگر پلان بی بنایا ہوتا تو ایک دم ایونٹ کو ختم نہ کرنا پڑتا۔ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ جن کے ٹیسٹ مثبت آئے انہیں قرنطینہ کراتے، تھوڑا وقفہ لیتے پی ایس ‏ایل ملتوی نہ کرتے اور اسے جاری رہنے دیتے،غیر ملکی کھلاڑیوں کو روکتے جو رک جاتا ٹھیک ورنہ باقیوں کو جانے ‏دیتے لیکن پی ایس ایل کو ملتوی نہیں کرنا چاہیے تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں