سپین میں آدمی ’ڈائنو سار‘کے مجسمے میں پھنس کر زندگی کی بازی ہار گیا

میڈرڈ(مانیٹرنگ ڈیسک) سپین میں ایک آدمی ’ڈائنوسار‘ کے مجسمے کے اندر پھنس کر موت کے منہ میں چلا گیا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس 39سالہ آدمی کی فیملی کی طرف سے چند دن قبل اس کی گمشدگی کی رپورٹ درج کرائی گئی تھی گزشتہ روزمجسمے سے بدبو آنے پر لوگوں نے مجسمے کی ٹانگ میں موجود ایک سوراخ سے اندر جھانکا تو انہیں لاش کی موجودگی کا شبہ ہوا، جس پر انہوں نے پولیس کو اطلاع دی اور پولیس نے آ کر آدمی کی گلی سڑی لاش مجسمے کے اندر سے نکالی۔

رپورٹ کے مطابق ڈائنوسار کا یہ مجسمہ سپین کے شہر بارسیلونا کی مضافاتی آبادی سانتا کولوما میں نصب کیا گیا ہے۔ پولیس کی طرف سے ابتدائی تحقیقات کے بعد بتایا گیا ہے کہ ممکنہ طور پر اس آدمی کا موبائل فون غلطی سے ڈائنوسار کے اندر سے خالی مجسمے میں گر گیا تھا جسے واپس نکالنے کے لیے یہ شخص مجسمے کے اندر گیا لیکن وہاں پھنس گیا اور باہر نہ نکل سکا۔ پولیس ترجمان کے مطابق یہ مجسمہ اس قدر تنگ ہے کہ آدمی اس میں داخل ہو کر واپس نہیں پلٹ سکتا اور اسے الٹے قدموں ہی واپس نکلنا ہوتا ہے، جس میں یہ آدمی ناکام رہا اور اندر ہی پھنس گیا۔ اس کیس میں مزید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں