ملک میں چینی کا ایک اور بڑا اسکینڈل سامنے آگیا

ملک میں چینی کا ایک اور بڑا اسکینڈل سامنے آیا ہے اور چینی مافیا کی جانب سے چند ماہ کے دوران عوام سے اربوں روپے بٹورنے کا انکشاف ہوا ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام آج شاہ زیب خان زادہ کے ساتھ میں حکومت کے اپنے اعداد و شمار سے چونکا دینے والے حقائق سامنے لائے گئے۔

یہ بھی پڑھیں
بعض سیاسی جماعتوں کے سرکردہ افراد شوگر مافیا کے ساتھ ہیں: ڈائریکٹر ایف آئی اے
شوگر مافیا کی وزیراعظم کو دھمکی، قیمتیں بڑھ گئیں
شوگر مافیا کو ٹھکانے لگانے کیلئے کونسا ادارہ کیا کارروائی کر رہا ہے؟
حکومتی اعداد و شمار میں انکشاف ہوا کہ ملک میں چینی کی قیمت 110 روپے تک پہنچ گئی ہے اور رواں برس جنوری سے جولائی تک مہنگی چینی کی فروخت سے شوگر ملز مالکان کو 32 ارب روپے کا فائدہ پہنچایا گیا جبکہ 198 ارب روپے پہلے ہی عوام کی جیب سے نکالے جا چکے ہیں۔

پروگرام کے دوران یہ انکشاف بھی ہوا کہ یوٹیلٹی اسٹورز نے بھی مہنگی چینی خرید کر سبسڈی کے ساڑھے 3 ارب روپے شوگر مل مالکان کی جیب میں ڈال دیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں