’نواز شریف سفر نہیں کرسکتے‘، تازہ ترین میڈیکل رپورٹ عدالت میں جمع

لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹ لاہور ہائیکورٹ میں جمع کروا دی گئی ہے۔

امجد پرویز ایڈوکیٹ نے نواز شریف کی 3 صفحات پر متشمل میڈیکل رپورٹ لاہور ہائیکورٹ میں جمع کروائی۔

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹرز نے نواز شریف کو سفر کرنے سے سے روک دیا ہے اور کورونا وبا کے سبب انہیں عوامی مقامات پر جانے سے گریز کرنے کی ہدایت کی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ نواز شریف مخلتف بیماریوں میں مبتلا ہیں، انہیں مزید احتیاط کی ضرورت ہے، نواز شریف کو لندن میں اپنے اسپتال کے قریب ہی رہنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں
نواز شریف کو باہر بھجوانے کا فیصلہ حکومت کا تھا: شہباز شریف
شیخ رشید نے نواز شریف اور بانی متحدہ کو واپس لانے کے معاملے سے ہاتھ اٹھالیے
’نواز شریف کی رپورٹس پر میڈیکل بورڈ کو بیوقوف نہیں بنایا گیا‘
’سفر سے نوازشریف کی جان کو خطرات ہیں‘، میڈیکل رپورٹس عدالت میں جمع
امجد پرویز ایڈوکیٹ کی جانب سے جمع کروائی گئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف لندن میں زیر علاج ہیں جہاں ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف ان کی صحت سے آگاہ ہیں، لندن میں نواز شریف کا بہترین علاج ہو رہا ہے۔

خیال رہے کہ 8 نومبر 2020 کو شہباز شریف نے وزارت داخلہ کو نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست دی اور 12 نومبر کو وفاقی کابینہ نے نوازشریف کو باہر جانے کی مشروط اجازت دی۔

ن لیگ نے انڈيمنٹی بانڈ کی شرط لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردی اور 16 نومبر کو لاہور ہائیکورٹ نے نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی جس کے بعد 19 نومبر کو نواز شریف علاج کے لیے لندن چلے گئے جہاں وہ اب تک قیام پزیر ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں