’طالبان نے افغان سرزمین کالعدم ٹی ٹی پی کیلئے استعمال نہ ہونے کا یقین دلایا ہے‘

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا ہےکہ طالبان نے یقین دلایا ہے کہ افغان سرزمین کالعدم ٹی ٹی پی کو استعمال نہیں کرنے دیں گے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ کچھ عناصر نہیں چاہتے ہیں کہ پاکستان سی پیک پر آگے بڑھے کیونکہ افغانستان کے حالات کی وجہ سے سی پیک اور اہم ہوگیا ہے اور اس کے خلاف سازشیں ہورہی ہیں، بعض دستانے پہنے ہاتھ نہیں چاہتے پاکستان آگے جائے مگر عمران خان کی حکومت کا عزم ہے کہ سی پیک کو آگے لے کر جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں
پنجشیر طالبان کے محاصرے میں ہے: ذبیح اللہ مجاہد
پنجشیر پر قبضے کیلئے طالبان اور مزاحمتی فوج کی لڑائی شروع
بھارت کے افغانستان سے اچھے تعلقات پر اعتراض نہيں: شاہ محمود
انہوں نے کہا کہ افغانستان سے آمد پر سفارتکاروں اور دیگرکو ایک ماہ کا ویزا دے رہے ہیں جب کہ افغان مہاجرین سے متعلق ابھی فیصلہ نہیں ہوا اور اس وقت تک افغان مہاجرین سے متعلق کوئی دباؤ نہیں، چمن اور طورخم بارڈر تجارت کیلئے کھلا ہے، 853 افراد طورخم کے راستے پاکستان داخل ہوئے۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ہماری خواہش ہے کہ افغانستان میں امن ہو ، ہم دنیا کے ساتھ مل کر افغانستان میں امن چاہتے ہیں، دنیا کی توجہ کا مرکز اس وقت کابل ائیر پورٹ بنا ہوا ہے۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ طالبان نے یقین دلایا ہے کہ افغان سرزمین کالعدم ٹی ٹی پی کو استعمال نہیں کرنے دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن ٹھس ہے، تین سال سے یہ جلسے کررہے ہیں کوئی نتیجہ نہیں نکلا البتہ مولانا فضل الرحمان کی سیاست شاید افغانستان کی وجہ سے اچھی ہوجائے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ مریم نواز نے ہم سے کوئی اجازت ہی نہیں مانگی، اگر وہ اجازت مانگتیں تو اس معاملے کو کابینہ میں ضرور رکھتا جب کہ شہباز شریف کی درخواست کا وقت گزر چکا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں