شام و فلسطین میں بھی امن نہیں لیکن کوئی اس پر بات نہیں کرتا: گوہر خان

بھارتی اداکارہ گوہر خان کا کہنا ہے کہ فلسطین اور شام میں بھی امن نہیں لیکن اس کے بارے میں کوئی بات کرنے کو تیار نہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق گوہر خان نے اپنی 38 ویں سالگرہ کے موقع پر کہا کہ میں چاہتی ہوں کہ لوگ طاقت، مذہب اور دوسروں کے ذہنوں کے استحصال کے نام پر کوئی بھی کارروائی کرنا چھوڑ دیں۔

یہ بھی پڑھیں
’بھارت کو ایسے مردوں کی ضرورت ہے‘، گوہر خان ٹیکسی ڈرائیور کی معترف
گوہر خان کو حنا خان کے والد کے انتقال کی تعزیتی پوسٹ نہ کرنے پر تنقید کا سامنا
گوہر خان پر مقدمہ درج ہونے کے بعد اداکارہ کی ٹیم کی وضاحت
اداکارہ نے کہا کہ آج کل ہر شخص افغانستان میں طالبان کے کنٹرول سے متعلق بات کررہا ہے جو کہ پاگل پن ہے، میں جاننا چاہتی ہوں کہ کتنے لوگ ایسے ہیں جنہوں نے گزشتہ 20 سالوں میں افغانستان میں امریکا کے دورِ حکومت کے دوران افغانیوں کے مسئلوں کے خلاف آواز اٹھائی؟

انہوں نے کہا کہ یہ تمام سال افغانستان میں سکون سے نہیں گزارے گئے، یہ جنگ کا دورانیہ تھا، لوگ امریکا کی حکومت کے وقت بھی مررہے تھے، طالبان بھی حملے کررہے تھے، شام اور فلسطین میں بھی امن نہیں لیکن کوئی اس حوالے سے بات نہیں کرتا۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ مجھے لگتا ہے یہ میڈیا کی جانب سے چلائے جانیوالا پروپیگنڈا ہے کہ لوگوں کو کس مسئلے کی حمایت کرنی چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں